ساری رات 32 کلو میٹر پیدل چل کر کام پر پہنچنے والے ملازم کو مالک نے اپنی گاڑی دے دی

 

ایک امریکی کمپنی کے مالک نے والٹر نامی ملازم کو اپنی نئی گاڑی تحفے میں دے دی۔ کیوں کہ وہ ساری  ساری رات پیدل چل کر 32 کلومیٹر کا فاصلہ تہ کر کے نوکری کے پہلے دن کام پر پہنچا تھا۔

والٹر  کی اپنی گاڑی خراب ہو گئی تو اس نے ۳۲ کلو میٹر دور  نواحی علاقے میں واقع ایک گھرتک  پیدل چل کر جانے کا فیصلہ کیا جہاں اسے سامان منتقل کرنے کے لیے بلایا گیا تھا۔

راستے میں ایک پولیس اہلکار والٹر کی ہمت سے اس قدر متاثر ہوا کہ  پولیس اہلکار نے والٹر کو ناشتہ کروادیا۔  جب یہ کہانی سوشل میڈیا پر پہنچی تو لوگوں نے والٹر کو خوب داد دی۔

 

اس کمپنی کی ایک ملازم جیمی   نے فیس بک پرپوسٹ کی کہ مالک نے  اپنے گھر کا سامان منتقل کروانا تھاپوری رات   کے سفر کے بعد جب صبح دروازے کی گھنٹی بجی تو مالک کے دروازہ کھولنے پرایک پولیس اہلکار والٹر کار کے ہمراہ وہاں کھڑا تھا۔ پولیس اہلکار نے بتایا کہ والٹر تمام رات پیدل سفر  کرکے  وہاں تک پہنچاہے  کیوں کہ انھیں گھر کے سامان کی منتقلی کا کام کرنا تھا۔

لیمی نے یہ بھی لکھا کہ انھوں نے والٹر کو کہا کہ وہ پہلے تھوڑا دم لے لیں لیکن اس نے انکار کر دیا اور فوراً کام پر جُٹ گیا۔

 

 

کمپنی کے مالک  ٹینیسی سے اپنے اس نئے ملازم کو دیکھنے کے لیے آئے۔ کمنی کے مالک نے والٹر کے ساتھ کافی پینے کے بعداسے اپنی 2014 ماڈل کی فورڈ ایسکیپ گاڑی ادے دی
والٹر نے پیر کے روز نامہ نگاروں کو بتایا کہ ‘یہ میری پہلی نوکری ہے اور اج میرا پہلا دن ہے ،  میں دکھانا چاہتا تھا کہ میرے اندر جذبہ ہے۔ میں نے سوچا کہ جیسے بھی ہو، میں کام کر دکھاؤں گا۔’

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *